بلاول بھٹو کی زندگی کو خطرات لاحق ہیں کچھ ہوا تو ذمہ داری وفاقی حکومت پر ہوگی: مولابخش چانڈیو

سندھ وزیر اطلاعات مولابخش چانڈیو نے کہا ہے کہ پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو کی زندگی کو خطرہ اور خدشات لاحق ہیں وفاقی حکومت سے ہمارا مطالبہ ہے کہ انہیں جلد سے جلد سیکیوریٹی فراہم کرے اگر انہیں کچھ ہوا تو اس کی ذمہ داری وفاقی حکومت پر عائد ہوگی،پنجاب سمیت باقی صوبوں اور وفاق کے مشیروں کے پاس محکمے ہیں پھر سندھ میں امتیازی سلوک کیو ں کیا جارہا ہے اختلاف کرنا ہماراحق ہے عدلیہ کے خلاف لڑنے کا تصور بھی نہیں کرسکتے سندھ کے مشیر کے خلاف ہونے والے فیصلے کے خلاف اپیل میں جائیں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کو کراچی پریس کلب کے دورے کے موقع پر صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر ان کے ہمراہ کراچی پریس کلب کے صدر فاضل جمیلی اور سیکرٹری اے ایچ خانزادہ بھی موجود تھے۔مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ مشیر پنجاب اور وفاق دیگر صوبوں میں بھی ہیں ان کے پاس محکمے بھی ہیں پھر سندھ کے ساتھ امتیازی سلوک کیو ں کیا جارہا ہے کسی کو بھی مشیر لگانا اور اسے محکمہ دینا وزیراعلیٰ کا استحقاق ہوتا ہے۔انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے ہمیشہ عدلیہ کا بہت احترام کیا ہے ہمارے دو وزرائے اعظم یو سف رضا گیلانی اور راجہ پرویز اشرف کو عدالت نے بلایا اور وہ عدالت میںحاضر ہوئے پی پی کا یہ طرہ امتیاز ہے کہ اس نے ہمیشہ عدلیہ کا احترام کیا ہے عدالتوں سے ہم کبھی بھاگے نہیں ، انہوں نے کہا کہ میں عدلیہ کے خلاف کوئی ایسی بات نہیں کرسکتا جو توہین کے زمرے میں آئے ہم انتشار نہیں پیدا کرنا چاہتے۔انہوں نے کہا کہ پشاور پبلک اسکول میں دھشت گردی ہوئی جو لوگ برے طالبان اور اچھے طالبان کے الفاظ استعمال کرتے وہ اس مو قع پر خاموش رہے اور پنجاب میں کالعدم جماعتوں کے لوگوں کو ٹکٹ بھی دیئے گئے۔ پی پی پی کو سب سے زیادہ دھشت گردی سے نقصان ہوا اور ہماری قائد بھی دہشت گردی کا شکار ہوئیں جس کی مثال نہیں ملتی وہ عالم اسلام کی پہلی خاتون وزیراعظم تھیں۔ انہوں نے کہا کہ ہماری درخواست کے باوجود وفاقی حکومت بلاول بھٹو کو سیکورٹی فراہم نہیں کر رہی ہے۔بلاول بھٹو پاکستان کی امید ہیں آنے والے دنوں میں انہیں ہی پاکستان کی قیادت کرنی ہے‘ وفاقی حکومت انہیں سیکورٹی دینے سے گریز کر رہی ہے دراصل وفاقی حکومت چاہتی ہے کہ بلاول بھٹو باہر نہ نکلیں اور کسی سے نہ ملیں اس لئے کہ وہ نواز شریف اور شہباز شریف کے لئے چیلنج بنتے جار ہے ہیں۔ بلاول بھٹو کے حوالے سے بہت خدشات ہیں اور ن کی زندگی کو خطرہ ہے اگر انہیں کچھ ہوا تو اس کی ذمہ داری وفاقی حکومت پر عائد ہوگی‘ بلاول بھٹو کا نواسہ ہے اور شہید بے نظیربھٹو کا بیٹا ہے وہ کسی سے ڈرنے اور گھبرانے والا نہیں وہ باہربھی نکلے گا اور لوگوں سے بھی ملے گا۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ سندھ وزراءاور مشیروں کے حوالے سے مشاورت کے لئے دبئی گئے ہیں۔

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s